ارشاد رانجھانی قتل: رحیم شاہ سمیت پولیس افسران کیخلاف مقدمہ درج

0
370

کراچی کے علاقے بھینس کالونی میں ارشاد رانجھانی کی ہلاکت پر یونین کونسل (یوسی) چیئرمین رحیم شاہ، ڈی ایس پی شاہ لطیف ٹاؤن، قائم مقام ایس ایچ او اور گارڈ  کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

تحقیقات کرنے والی پولیس ٹیم کی سفارش پر یوسی چیئرمین رحیم شاہ کو گزشتہ روز  ہی گرفتار کرلیا گیا تھا۔

پولیس کےمطابق مقتول ارشاد رانجھانی کے قتل کا مقدمہ شاہ لطیف تھانے میں درج کرلیا گیا ہےجس میں ڈی ایس پی شاہ لطیف ٹاؤن، قائم مقام ایس ایچ او، یوسی چیئرمین رحیم شاہ اور ان کے نامعلوم گارڈ کو نامزد کیا گیا ہے۔

ارشاد رانجھانی قتل کیس، ایڈیشنل آئی جی کراچی کو ہٹانے کا فیصلہ

پولیس کا کہنا ہے کہ مقدمے میں انسداد دہشت گردی اور قتل کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

قبل ازیں ڈی آئی جی ایسٹ عامر فاروقی نے آج پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ واقعہ ڈکیتی کا ہی ہے، یوسی چیئرمین رحیم شاہ بینک سے رقم لے کر نکلے تو نرسری سے ان کا تعاقب کیا گیا اور بھینس کالونی کے علاقے میں گاڑی روک کر اسلحہ کے زور پر انہیں لوٹنے کی کوشش کی گئی۔

ارشاد رنجھانی کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم رحیم شاہ گرفتار

ڈی آئی جی عامر فاروقی کے مطابق جائے وقوع  سے اسلحہ بھی برآمد کرلیا گیا ہے جبکہ پولیس نے غفلت برتنے پر سب انسپکٹر کو معطل کردیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ یوسی چیئرمین اور مقتول ارشاد دونوں پر کیسز ہیں، تاہم ارشاد رانجھانی کے اہلخانہ کے کہنے پر دوسرا مقدمہ درج کریں گےاور پھر فیصلہ عدالت کرےگی۔

واضح رہے کہ ارشاد رانجھانی کو 6 فروری کو بھینس کالونی کے یوسی چیئرمین رحیم شاہ نے ڈاکو قرار دیتے ہوئےقتل کر دیا تھا۔

ارشاد رانجھانی کے لواحقین کے شدید احتجاج اور سوشل میڈیا پر معاملہ گرم ہونے پر وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے کیس کی جوڈیشل انکوائری کروانے کا فیصلہ کیا تھا۔

تھانہ شاہ لطیف ٹاؤن میں مقدمہ ارشاد رانجھانی کے بھائی خالد رانجھانی کی مدعیت میں درج ہوا ہے۔

LEAVE A REPLY