جسٹس فار ارشاد رانجھانی، سندھ کی عوام سڑکوں پر نکل آئی

0
319

جسٹس فار ارشاد رانجھانی، سندھ کی عوام سڑکون پر نکل آئی

کراچی: کراچی کے علائقے بھینس کالونی میں نوجواں ارشاد رانجھانی کو دن دہاڑے قتل کرنے والا یوسی چیئرمین رحیم شاہ تاحال قانون کی گرفت میں نہیں آیا، کراچی سمیت سندھ کی دیگر شھروں میں مختلف تنظمیون اور سول سوسائٹی کا احتجاج، قاتل کی گرفتاری کا مطالبا۔

کراچی میں سول سوسائٹی اور مختلف تنظیمون کی جانب سے کراچی پریس کلب سے گورنر ہاؤس ریلی نکالی گئی، جس میں بڑی تعداد میں لوگ شریک تھے۔

احتجاج میں شریک رہنما جسٹس فار ارشاد رانجھانی اور قاتل رحیم شاہ کو گرفتار کرو کے فلگ شگاف نعرے بلند کر رہے تھے۔

اس موقعی پر رہنمائوں کا کہنا تہا کے رحیم شاہ نے دن دہاڑے ایک نوجوان کو قتل کیا لیکن پولیس نے تاحال اسے گرفتار نہیں کیا، جبکہ اوپر سے مقتول پر مقدمات بناکر کیس خراب کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔

انہوں نے مطالبا کیا کہ ارشاد رانجھانی کے قاتل کو گرفتار کر سرعام پھانسی پر لٹکایا جائے۔

دوسری جانب حیدرآباد، میرپورخاص، لاڑکانہ خیرپور، دادو، میھڑ اور سندھ کے دیگر شہروں مین بھی ارشاد رانجھانی کے قتل کے خلاف احتجاج کیا گیا۔

ادھر سوشل میڈیا پر بھی ارشاد رانجھانی کے قاتل کو گرفتار کرنے کے حوالے سے ٹاپ ٹرینڈنگ چل رہی ھے۔

سوشل میڈیا کے ذریعے پیر کے دن کراچی کے علاقے کارساز پر دھرنا دینے کے حوالے سے بھی مہم چلائی جا رہی ھے۔

سندھ کی سول سوسائٹی جہاں قاتل کی گرفتاری پر سراپہ احتجاج ہے وہیں سندھ حکومت کے اقدامات سے مطمئن نہیں، جبکہ پولیس کی قائم کردہ کمیٹی پر بھی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں۔

LEAVE A REPLY