بی جے پی مخالف پوسٹ، پروفیسر گھٹنوں کے بل جھک کرمعافی مانگنے پر مجبور

0
104

بھارتی انتہا پسندوں سے پڑوسی ملک کے استاد بھی محفوظ نہیں رہے۔ ریاست کرناٹک میں انتہا پسندوں نے بی جے پی مخالف پوسٹ کرنے پر پروفیسر کا منہ کالا کر دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق انتہا پسندوں نے پروفیسر سندیپ واتھر پر بھارت مخالف پوسٹ کرنے پر اسے گھٹنوں کے بل جھک کر معافی بھی مانگنے پر مجبور کردیا۔

انتہا پسندوں نے پروفیسر پر تشدد کیا اور اسے پاکستانی ایجنٹ بھی قرار دے دیا۔

واقعہ کرناٹک کے ضلع وجے پورہ کے انجنئیرنگ کالج میں پیش آیا، بھارتی میڈیا کے مطابق موقع پر کھڑی پولیس خاموش تماشائی کا کردار نبھاتے ہوئے منہ دیکھتی رہی۔

سندیپ واتھر نے جنگی ماحول پیدا کرنے پر بی جے پی پر تنقید کی تھی اور پائلٹ کو رہا کرنے پر وزیراعظم عمران خان کو سراہا تھا۔

بھارتی وزیراعظم کے جنگی جنون کے خلاف پڑوسی ملک بڑی تعداد میں لوگ آواز بلند کرنے لگے ہیں۔

گزشتہ روز بھارتی میڈیا پر مقبوضہ کشمیر میں ہیلی کاپٹر حادثے میں مارے جانے والے بھارتی فضائیہ کے اسکواڈرن لیڈر نیناد مندوگانے کی اہلیہ ویجیتا کا کہنا تھا کہ ‘ہم جنگ نہیں چاہتے’، آپ کو نہیں پتہ کہ جنگ میں کیا نقصان ہوتا ہے۔ اور کسی نیناد کو اب سرحد کی دونوں جانب سے رخصت نہیں ہونا چاہیے۔

LEAVE A REPLY