معاشرے کا دیوالیہ پن، طالبعلم نے اسکول پرنسپل کو قتل کردیا

0
114

لاہور کے علاقے سندر میں نویں جماعت کے طالب علم نے تیز دھار آلے سے اپنے ہی اسکول کی پرنسپل کو مبینہ طور پر قتل کر دیا۔ پولیس نے 18 سالہ ملزم رضوان کو گرفتار کر لیا۔

المناک واقعہ سندر میں پیش آیا جہاں نویں جماعت کے 18 سالہ طالب علم رضوان نے اپنے ہی مستقبل کو سنوارنے والی استاد کو تیز دھار آلے سے حملہ کر کے موت کی وادی میں دھکیل دیا۔

اسکول پرنسپل نے رضوان کی پڑھائی میں عدم دلچسپی پر اس کے والدین کو آگاہ کیا تو رضوان نے ناراض ہو کر پرنسپل شگفتہ پر تیز دھار چھری سے حملہ کر دیا۔ اچانک حملے میں پرنسپل شگفتہ جاں بحق ہو گئی جبکہ بہن فوزیہ شدید زخمی ہوئی۔

شدت غم سے نڈھال مقتولہ پرنسپل شگفتہ کے والد نے قاتل کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ شاگرد کے ہاتھوں استاد کا قتل جہاں معاشرے کے دیوالیہ پن کا ثبوت ہے وہیں اس بات کی طرف بھی اشارہ کرتا ہے کہ تربیت وقت کی اہم ضرورت ہے۔

LEAVE A REPLY