ہتک عزت کا دعویٰ، میشا شفیع کی درخواست پر فیصلہ آج سنایا جائے گا

0
42

لاہور:معروف گلوکارعلی ظفر کے ہتک عزت کےدعویٰ کے حوالے سے کیس میں گلوکارہ میشا شفیع کی درخواست پر فیصلہ آج سنایا جائیگا۔

سیشن عدالت میں گلوکار علی ظفر کے ادکارہ میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوی پر سماعت ہوئی۔ ایڈیشنل سیشن جج شکیل احمد نے میشا شفیع کی گواہان کے ناموں کی فہرست کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کیا۔

عدالت میشا شفیع کی درخواست پر آج 19 مارچ کو فیصلہ سنائے گی۔ میشا شفیع نے علی ظفر سے گواہان کی فہرست طلب کرنے کی درخواست دائر کی تھی۔

علی ظفر نے عدالت کو جواب میں بتایا کہ میشا شفیع ایسی درخواستیں دیکر عدالتی وقت ضائع کررہی ہیں۔ علی ظفر نے استدعا کی کہ عدالت میشا شفیع کی درخواست کو مسترد کرنے کا حکم دے۔

یاد رہے علی ظفر نے گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف زیرسماعت مقدمہ کا فیصلہ ایک ماہ میں کرنے کی استدعا کے ساتھ درخواست بھی  دائر کررکھی ہے۔

علی ظفر نے اپنے وکیل رانا انتظار کے توسط سے دائر درخواست میں استدعا کی ہے کہ میشا شفیع اوران کے وکلا کو عدالت کا مزید وقت ضائع کرنے کی اجازت نہ دی جائے،دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ فریق مخالف سچائی چھپانے کے لیے تاخیری حربے استعمال کررہا ہے۔

معروف گلوکار کی جانب سے دائر درخواست پر عدالت نے سماعت کے لیے 19 مارچ کی تاریخ مقرر کردی ہے۔

یاد رہے کہ گلوکارہ میشا شفیع گزشتہ سال اپریل میں سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر لکھا تھا کہ معروف گلوکار علی ظفر نے انہیں ایک سے زائد مرتبہ جنسی طورپرہراساں کیا ہے۔علی ظفر نے گلوکارہ میشا شفیع کو جنسی ہراساں کرنے کا الزام لگانے کی پاداش میں دس کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوا رکھا ہے۔

علی ظفر نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ میشا شفیع نے اُن پر جنسی ہراساں کرنے کے بے بنیاد الزامات عائد کیے ہیں اور اس الزام کو میڈیا پر دہرایا بھی ہے۔

پاکستانی گلوکار نے نوٹس میں کہا کہ میشا شفیع دو ہفتے میں میڈیا پر آکر اُن سے معافی مانگیں ورنہ ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا جائے گا۔

LEAVE A REPLY