اب جنگی جہاز لوگوں کو سحری میں جگائیں گے

0
264

جکارتہ: انڈونیشیا کی ایئرفورس نے حیران کن اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماہ رمضان کے دوران لوگوں کو سحری کے وقت جگانے کیلئے وہ جنگی جہاز استعمال کرے گی۔

انڈونیشیائی ائیر فورس کا کہنا تھا کہ مشرقی جاوا، سوراکارتا، کلاٹن اور سراجین سمیت دیگر کئی شہروں میں جیٹ فائٹرز کی مشقیں سحری کے وقت کی جائیں گی تاکہ شہریوں کو روزے کے لیے جگایا جا سکے۔

انڈونیشیا کی ایئرفورس نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام دیتے ہوئے کہا کہ ‘انشااللہ ہم جنگی جہازوں کے ذریعے سحری کے لیے لوگوں کو جگانے کی روایت قائم رکھیں گے’۔

ائیر فورس کے ترجمان نے کہا اس روایت کا مقصد صرف لوگوں کو جگانا ہی نہیں بلکہ ایئرفورس کے عملے کو رمضان کے دوران تربیت دینا بھی ہے۔

انہوں نے کہا کہ طلوع سحر کا وقت فائٹر پائلٹس کے لیے سب سے بہترین ہوتا ہے کیونکہ طبی ماہرین کے مطابق صبح 10 بجے کے بعد لوگوں کے خون میں شوگر کی مقدار گرنا شروع ہوجاتی ہے اور یہ جنگی جہاز اڑانے کیلئے مناسب ترین وقت ہوتا ہے۔

سحری کے وقت پائلٹس نہ صرف نیچی اڑان کرنے والے جہاز اڑائیں گے بلکہ وہ ‘آفٹر برنر’ بھی استعمال کریں گے جن کی وجہ سے آواز پیدا ہوتی ہے۔

یاد رہے کہ ایئر فورس نے کئی برس قبل طلوع سحر کے وقت تربیتی پروگرام شروع کیا تھا جس میں بنیادی طور پر دو قسم کے جنگی جہاز، ایف 16 اور ٹی 50 آئی استعمال کیے جاتے ہیں۔

LEAVE A REPLY