سینیٹر روبینہ خالد اور دیگر ملزمان پر 23 جولائی کو فردِجرم عائد کرنے کا فیصلہ

0
151

اسلام آباد: احتساب عدالت نے پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) سینیٹر روبینہ خالد اور دیگر ملزمان پر لوک ورثہ فنڈز میں مبینہ خردبرد کے الزام پر فردِ جرم عائد کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے لوک ورثہ فنڈز میں مبینہ خردبرد کیس کی سماعت کی جس میں پی پی سینیٹرروبینہ خالد، مظہر السلام ،تابندہ ظفر اور محمد شفیع عدالت میں پیش ہوئے۔

سماعت کے دوران عدالتی حکم پر قومی احتساب بیورو (نیب)کی جانب سے ملزمان کو ریفرنس کی نقول فراہم کی گئیں۔

 بعد ازاں عدالت نے ملزمان پر تئیس جولائی کو فرد جرم عائد کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت ملتوی کردی ۔

نیب نے پی پی پی لیڈر اور سینیٹر روبینہ خالد کیخلاف یکم جولائی کو لوک ورثہ فنڈز میں مبینہ خرد برد کے الزامات کے تحت ریفرنس دائر کیا تھا۔

LEAVE A REPLY