سندھ سرکار میں بڑی تبدیلیاں، سردار شاہ تعلیم کی وزارت سے فارغ

0
85

کراچی: سندھ سرکار کا ایک بار پھر  کابینہ میں شامل وزرا اور مشیران کے قلمدان تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے، اس ضمن میں نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرِاعلیٰ سند نے معیاری کارکردگی نہ دکھانے والے مشیروں اور وزرا کے قلمدان تبدیل کردیے۔

صوبائی وزیرِ بلدیات سعید غنی کو اطلاعات، سہیل انور سیال کو آبپاشی، ناصر حسین شاہ کو بلدیات جبکہ جام اکرام اللہ خان دھاریجو کو صنعت و تجارت کے قلمدان تفویض کیے گئے ہیں۔

نوٹیفکیشن کے مطابق صوبائی وزیر عبدالباری پتافی کو لائیو اسٹاک اور فشریز جبکہ ہری رام کشوری لال کو اقلیتی امور اور خوراک کے قلمدان الاٹ کیے گئے ہیں۔

نوٹیفکیشن میں مزید بتایا گیا ہے کہ  شبیر بجارانی کو قدرتی وسائل، پبلک پیلتھ اور دیہی ترقی جبکہ اسماعیل راہو کو  زراعت کے قلمدان سونپے گئے ہیں۔

دوسری جانب سردار شاہ سے تعلیم اور اینٹیکوئیٹی کے قلمدان واپس لے لیے گئے ہیں جسکے بعد وہ اب صرف بطور وزیرِ ثقافت و سیاحت کی حیثیت سے کام کریں گے جبکہ فراز احمد ڈیرو کو بحالی کا قلمدان دان دیا گیا ہے۔

صوبائی حکومت کی طرف سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق تیمور تالپور کو انفارمیشن سائنس اینڈ ٹیکنالوجی جبکہ مرتضیٰ بلوچ کو ہیومن سیٹلمنٹ کا قلمدان دیا گیا ہے۔

سندھ حکومت کی جانب سے مشیروں کے قلمدان تبدیل اور تفویض کرنے کا بھ نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے جسکے مطابق سینیئر رہنما پیپلز پارٹی نثار کھوڑو  کو ورکس اور سروسز ، یونیورسٹیز اینڈ بورڈز ڈپارٹمنٹ کے قلمدان جبکہ مرتضیٰ وہاب کو  قانون، ماحولیاتی تبدیلی اور ساحلی ترقی جبکہ اعجاز شاہ شیرازی کو سماجی بہبود کے شعبے کا قلمدان سونپا گیا ہے۔

LEAVE A REPLY