رانا ثناءاللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 28 جولائی تک توسیع

0
54

لاہور: منشیات برآمدگی کیس میں گرفتار رہنما پاکستان مسلم لیگ (ن) سابق وزیر قانون پنجاب رانا ثناءاللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں مزید 5 روز کی توسیع کر دی گئی۔

سابق وزیرِ قانون پنجاب کو جوڈیشل ریمانڈ کی مدت ختم ہونے پر جج مسعود ارشد کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

رانا ثناء اللہ کی پیشی کے موقع پر جوڈیشل اکیڈمی کے اطراف میں سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

را ثناءاللہ کی جانب سے انکے وکیل اعظم نذیر تارڑ نے دلائل دیے جبکہ اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) حکام کی جانب سے راجہ انعام منہاس ایڈووکیٹ پیش ہوئے۔

دورانِ سماعت عدالت نے رانا ثناءاللہ کو روسٹرم پر بلوایا اور رہنما ن لیگ کے دستخط کے بعد سی سی ٹی وی فوٹیج سیل کردی۔

عدالت نے آئندہ سماعت پر اے این ایف حکام کو ہر کیس کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سابق صوبائی وزیرِقانون کے جوڈیشل ریمانڈ میں 5 روز کی توسیع کرتے ہوئے سماعت 28 جولائی تک ملتوی کردی۔

خیال رہے کہ اے این ایف حکام نے 2 جولائی کو سابق صوبائی وزیرِ قانون پنجاب رانا ثناءاللہ کو موٹروے پر گاڑی سے منشیات کی برآمدگی پر گرفتار کیا گیا تھا۔

دوسری جانب عدالت نے رانا ثناءاللہ کے اثاثہ جات منجمند کرنے کی درخواست پر سماعت 7 ستمبر تک ملتوی کر دی۔

LEAVE A REPLY