سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ملی بھگت سے کثیرالمنزلہ عمارت تعمیر ہونے کا انکشاف

0
63

کراچی: شہرِقائد کے علاقے گلشنِ اقبال میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی مبینہ ملی بھگت سے رہائشی پلاٹوں پر کثیرالمنزلہ عمارات کی تعمیر کے معاملے پر اینٹی کرپشن ڈپارٹمنٹ نے اعلیٰ سطحی تحقیقات کا آغاز کردیا۔

تفصیلات کے مطابق گلشنِ اقبال کے علاقے بلاک 11 میں نجی رہائشی پلاٹ نمبر 31 بی، 32 بی اور 33 بی کو ملا کر کثیرالمنزلہ عمارت تعمیر کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔

ذرائع کے مطابق مذکورہ عمارت کی تعمیر سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ملی بھگت سے ہوئی ہے اور اس عمارت کو گرانے کے احکامات ملنے کے باوجود کسی قسم کی کوئی قانونی کارروائی نہیں کی گئی۔

قوانین کی رو سے رہائشی علاقے میں کسی بھی قسم کی کمرشل یا گھریلو عمارت ایک منزلہ سے زائد نہیں ہوسکتی مگر سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی مبینہ ملی بھگت سے تین پلاٹوں کو ملا کر کثیرالمنزلہ عمارت تعمیر کی گئی ہے۔

دوسری جانب اینٹی کرپشن ڈپارٹمنٹ نے اس معاملے کی اعلیٰ سطحی تحقیقات کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اینٹی کرپشن ڈپارٹمنٹ کے انسپکٹر زاہد میرانی نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے حکام کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 16 ستمبر کو ریکارڈ سمیت پیش ہونے کے احکامات جاری کیے ہیں۔

LEAVE A REPLY